A walk in the garden

کہانی: باغ کی سیر

ایک دن کی بات ہے، ایک چھوٹے سے گاؤں میں ایک خوبصورت باغ تھا۔ یہ باغ چمکتا ہوا طبیعت کی زیبائی سے بھرپور تھا۔ اس باغ میں گلاب، گیندا، چمندی، جسمین، اور بہت سی دیگر خوبصورت پھولوں کی بوندیں تھیں۔

ایک دن، ایک لڑکا اپنے دوست کے ساتھ باغ کی سیر کرنے آیا۔ وہ دونوں نے باغ کی حسینیت کو دیکھ کر حیران ہوگئے۔ گلاب کی خوشبو، گیندے کی رنگینی، اور چمندی کی سرخی کو دیکھ کر دوستوں نے وقت گزارنے کا فیصلہ کیا۔

دوستوں نے سوچا، “ہمیں ان پھولوں کو اپنے گاؤں لے جانا چاہئے تاکہ ہم اپنے گاؤں کو بھی اس خوبصورتی سے سجانے کا موقع پائیں۔”

لڑکا اور اس کا دوست پہلے گلاب کی طرف گئے۔ لڑکا نے اپنے ہاتھوں سے ایک گلاب کو کھلی کیا اور اس کی خوشبو کا لطف اٹھایا۔ پھول کی خوشبو نے ان کو پگھلا دیا، اور وہ خوشی سے بھر گئے۔

پھر دوستوں نے گیندے کی طرف رخ کیا۔ گیندے کی رنگینی اور اس کی مخصوص مہک نے ان کو مغرور کر دیا۔ وہ دوست دوست کے ساتھ کھیلتے رہے اور گیندے کو اپنے ساتھ لے جانے کا فیصلہ کر لیا۔

آخر میں، دوستوں نے چمندی کی طرف بڑھتے ہیں۔ چمندی کی سرخی اور اس کی لطافت نے ان کو محبت کرنے کی باتیں یاد دلائیں۔ وہ دوستوں نے اپنے دلوں میں چمندی کو بسانے کا فیصلہ کیا۔

دوستوں نے اب گاؤں واپس لوٹنے کا راستہ اپنایا اور اپنے ساتھ گلاب، گیندے، اور چمندی لے جانے کا سفر شروع کیا۔

واپس گاؤں پہنچ کر، دوستوں نے باغ کے پھولوں کو اپنے گاؤں کی حسینیت کا حصہ بنایا۔ لوگ ان پھولوں کی خوشبو، رنگینی، اور لطافت سے محبت کرنے لگے اور گاؤں کا ماحول خوبصورتی سے بھر گیا۔

اس کے بعد، گاؤں کے لوگ اپنی حسین زندگی کا لطف اُٹھانے لگے اور باغ کی سیر کا ایک نیا موقع پائے۔

یہ کہانی ہمیں یہ سکھاتی ہے کہ حسین چیزوں کو اپنے دلوں میں پنے سکتے ہیں، اور یہ ہماری زندگیوں کو خوشی اور خوشبوداری سے بھر دیتی ہیں۔

Leave A Reply

Please enter your comment!
Please enter your name here