45+ Bewafa Quotes – Bewafa Poetry In Urdu 2 Lines

سن کر تمام رات میری دستان غم
بولے تو صرف یہ کہ بہت بولتے ہو تم

sun kar tamam raat meri Dastan gham
bolay to sirf yeh ke bohat boltay ho tum

وہ ملے گا تو اس سے پوچھوں گی فراز
کس کو آباد کیا مجھ کو برباد کرنے کے بعد

woh miley ga to is se pouchon gi frazz
kis ko abad kya mujh ko barbaad karne ke baad

اس سے تیری محبت کا تب احساس ہوگا
جب تو کسی اور کے پاس ہوگا

is se teri mohabbat ka tab ehsas hoga
jab to kisi aur ke paas hoga

سیکھا دی تمہیں بھی بے وفائی بے درد زمانے نے
کہ تم جو سیکھ جاتے ہو ہم پہ ہی آزماتے ہو

seekha di tumhe bhi be wafai be dard zamane ne
ke tum jo seekh jatay ho hum pay hi azmatay ho

تمہارے کہیں اور مصروف ہونے سے
صبر تو آجاتا ہے پر نیند نہیں آتی

tumahray kahin aur masroof honay se
sabr to ajata hai par neend nahi aati

ترے کہنے پہ چھوڑا ہے تجھے
زمانے سے نہ کہنا بے وفا ہوں

tre kehnay pay chorra hai tujhe
zamane se nah kehna be wafa hon

دل بھرنے کی دیر ہے بس بہانے مل ہی جاتے ہیں

dil bharnay ki der hai bas bahanay mil hi jatay hain

محبت ہم دونوں ہی بہت کرتے تھے
میں اس سے اور وہ کسی اور سے

mohabbat hum dono hi bohat karte thay
mein is se aur woh kisi aur se

کاش قیامت کے دن سوال ہو بے وفاؤں کا
اور تم مجھے گلے لگا کر کہو خدا کے لیے چپ رہنا

kash qayamat ke din sawal ho be wafaon ka
aur tum mujhe gilaay laga kar kaho kkhuda ke liye chup rehna

 

ترے کہنے پہ چھوڑا ہے تجھے
زمانے سے نہ کہنا بے وفا ہوں

دل بھرنے کی دیر ہے بس بہانے مل ہی جاتے ہیں

محبت ہم دونوں ہی بہت کرتے تھے میں اس سے اور وہ کسی اور سے

میں تو نادان تھا جو اس کو خود کا ہمسفر سمجھ بیٹھا
وہ چلتی تو میرے ساتھ تھی لیکن کسی اور کی تلاش میں

میری درد کی دوکان ہے صاحب
جو اپنوں کی بےوفائی سے چلتی ہے

meri dard ki dokaan hai sahib
jo apnon ki be wafai se chalti hai

سمٹ گیا میرا پیار چند الفاظوں میں
جب اس نے کہا محبت تو ہے مگر تم سے نہیں

simat gaya mera pyar chand alfazo mein
jab is ne kaha mohabbat to hai magar tum se nahi

فاتحہ پڑھنے بھی مت آنا یہ حق بھی کھو چکے ہو تم

Fatiha parhnay bhi mat aana yeh haq bhi kho chuke ho tum

جاتے وقت اس نے صرف اتنا ہی کہا مجھ سے
اپنی زندگی جی لینا ویسے پیار اچھا کرتے ہو

jatay waqt is ne sirf itna hi kaha mujh se
apni zindagi jee lena waisay pyar acha karte ho

بھول جاؤنگا تجھے اسی پل اسی وقت بس تو
اس سے ملا دے جو مجھ سے زیادہ چاہے تجھے

bhool jaaonga tujhe isi pal isi waqt bas to
is se mila day jo mujh se ziyada chahay tujhe

‏مجھ سے دامن نہ چھڑا مجھ کو بچا کر رکھ لے
مجھ سے اِک روز تُجھے پیار بھی ہو سکتا ہے

جا معاف کیا تجھے جی لے اپنی زندگی
ہم محبّت کے بادشاہ ہیں بے وفاؤں کے منہ نہیں لگتے

ja maaf kya tujhe jee le apni zindagi
hum mohabbat ke badshah hain be wafaon ke mun nahi lagtay

تم نے محبت ،محبت سے زیادہ کی ہے
ہم نے محبت ،تم سے بھی زیادہ کی ہے
تم کیا کرو گےمحبت کی ا نتہا
ہم نے ا نتہا سے ابتدا کی ہے

انگلی کاٹی خون بے بہا نکلا ساری دنیا
چھوڑ کر اک یار بنایا وه بھی بے وفا نکلا

ungli kaati khoon be baha nikla saari duniya
chore kar ik yaar banaya woh bhi be wafa nikla

مجبوریاں تیری سمجھتے،
سمجھتے بات ساری سمجھ گئے ہم

majboriyan teri samajte ,
samajte baat saari samajh gaye hum

وہ اس قدر اپنی ذات میں الجھا رہا کہ
وہ کس کس کو بھول گیا اسے خبر نہ ہوئی

woh is qader apni zaat mein uljha raha ke
woh kis kis ko bhool gaya usay khabar nah hui

یوں تو مر جاتے ہم تیرے اک اشارے پر
لیکن تیری بیوفائی نے ہمیں پہلے ہی مار ڈالا

yun to mar jatay hum tairay ik isharay par
lekin teri bewafaai ne hamein pehlay hi maar dala

ہاۓ اتنی جلدی بھول گیا ہم کو یہ ہنر تو نہیں آتا ہم کو

بے رخی آپ کی سر آنکھوں پر
یوں ذلیل کرنے کا سو بار شکریہ

be rukhi aap ki sir aankhon par
yun zaleel karne ka so baar shukriya

بے سبب ترک تعلق کا بہت رنج ہوا
لاکھ رنجشیں سہی اک عمر کا یارانہ تھا

be sabab tark talluq ka bohat ranj sun-hwa
laakh ranjishen sahi ik Umar ka yarana tha

وہ شخص بھی اپنے ہنر میں کیا کمال رکھتا ہے
محبت کسی کے ساتھ اور وفا کسی کے ساتھ رکھتا ہے

woh shakhs bhi –apne hunar mein kya kamaal rakhta hai
mohabbat kisi ke sath aur wafa kisi ke sath rakhta hai

میرا محبوب اتنا نادان ہے کہ پوچھو مت محبت کا
دعوی ہم سے کر کے ساتھ کسی اور کا نبھا رہا ہے

mera mehboob itna nadaan hai ke pucho mat mohabbat ka
daawa hum se kar ke sath kisi aur ka nibha raha hai

لوگ عشق کرتے ہیں بڑے شور کے ساتھ
ہم نے بھی کیا تھا بڑے زور کے ساتھ
مگر اب کرینگے بڑا غور کے ساتھ
کیونکہ کل اس کو دیکھا تھا کسی اور کے ساتھ

log ishhq karte hain barray shore ke sath
hum ne bhi kya tha barray zor ke sath
magar ab karaingay bara ghhor ke sath
kyunkay kal is ko dekha tha kisi aur ke sath

کسی کی زندگی بنو یا بندگی
میرے لیے تو مر گئے ہو خوش رہو

kisi ki zindagi bano ya bandagi
mere liye to mar gaye ho khush raho

‏میرے نام پہ رکھ کے اپنے بیٹے کا نام
وہ سمجھتی ہے کفارہ ہو گیا ادا بیوفائی کا

وہ مجھ کو چھوڑ کے جس آدمی کے پاس گئی
برابری کا بھی ہوتا تو صبر آ جاتا

woh mujh ko chore ke jis aadmi ke paas gayi
barabari ka bhi hota to sabr aa jata

غیر سے تم کو بہت ربط ہے مانا
لیکن یہ تماشا تو میرے بعد بھی ہو سکتا تھا

ghair se tum ko bohat rabt hai mana
lekin yeh tamasha to mere baad bhi ho sakta tha

ایک نقش بھی ادھر سے ادھر نہ ہونے پائے
میں جیسا تمہیں ملا تھا مجھے ویسا جدا کرو

aik naqsh bhi idhar se idhar nah honay paye
mein jaisa tumhe mila tha mujhe waisa judda karo

میری تباہیوں میں تیرا ہاتھ ہے مگر
میں سب سے کہ رہا ہوں مقدر کی بات ہے

meri tabahiyoo mein tera haath hai magar
mein sab se ke raha hon muqaddar ki baat hai

مجھے بےوفا کہنے سے پہلے میرے رگ رگ کا خون نچوڑ لینا
اگر قطرے قطرے سے وفا نہ ملی تو بیشک مجھے چھوڑ دینا

mujhe be wafa kehnay se pehlay mere rigg rigg ka khoon nichor lena
agar qatray qatray se wafa nah mili to bay shak mujhe chore dena

محبت میں اب نہ کروں گی کسی کو
میری جگہ تو نے دے دی کسی کو

mohabbat mein ab nah karoon gi kisi ko
meri jagah to ne day di kisi ko

انگلیاں آج بھی اسی سوچ میں گم رہتی ہیں
اس نے کیسے نئے ہاتھ کو تھاما ہوگا

ungelian aaj bhi isi soch mein gum rehti hain
is ne kaisay naye haath ko thaama hoga

رات ساری گزرتی ہے ان حسابوں میں
اسے محبت تھی ؟ نہیں تھی ؟ ہے ؟نہیں ہے ؟

raat saari guzarti hai un hsabon mein
usay mohabbat thi? nahi thi? hai? nahi hai

کچھ تو مجبوریاں رہی ہونگی ،
یونہی کوئی بے وفا نہیں ہوتا

kuch to majboriyan rahi hongi ,
yuhin koi be wafa nahi hota

میرے بعد کسی کو بھی اپنا بنا کے دیکھ لینا تیری ہی
دھڑکن کہی گی اُسکی وفا میں کچھ اور ہی بات تھی۔

mere baad kisi ko bhi apna bana ke dekh lena teri hi
dharkan kahi gi usakee wafa mein kuch aur hi baat thi

ہمیشہ محبت کو مجبوریاں لے ڈوبتی ہے
ورنہ کوئی شوق سے بے وفا نہیں ہوتا

hamesha mohabbat ko majboriyan le doobti hai
warna koi shoq se be wafa nahi hota

وہ بے وفا ہی سہی آؤ اسے یاد کریں
کہ ایک عمر پڑی ہے اسے بھلانے میں

woh be wafa hi sahi aao usay yaad karen
ke aik Umar pari hai usay bhulane mein

Leave A Reply

Please enter your comment!
Please enter your name here