“Love in Urdu: Embrace the Beauty of 150 Romantic Quotes and Shayari”

Discover the essence of love in its most enchanting form with our collection of 150 best love quotes in Urdu. Immerse yourself in the world of Urdu poetry and romantic Shayari that beautifully express the feelings of the heart. Each quote is a heartfelt expression of affection, passion, and devotion, resonating with lovers on a profound level.

Accompanied by captivating images, these love quotes in Urdu create a mesmerizing experience that celebrates the magic of love. Whether you are seeking words to express your feelings to a special someone or simply yearn to indulge in the beauty of love poetry, this collection is a haven for all lovers.

Allow these love quotes and Shayari in Urdu to ignite the spark of romance, evoke tender emotions, and weave a tapestry of cherished memories. Let the eloquence of the Urdu language touch your soul and inspire you to fall in love all over again.

Explore our handpicked selection of love quotes and immerse yourself in the emotions of love, passion, and affection. Celebrate the power of love with Urdu poetry and let its charm captivate you in the most profound way.

 

جیسے کوئی چھوڑ نہیں سکتا اپنا مذہب،
ایسا ہی کچھ عقیدہ رکھتے ہیں ہم تیرے لئے

jaisay koi chore nahi sakta apna mazhab ,
aisa hi kuch aqeedah rakhtay hain hum tairay liye

کسی کو جی بھر کے محسوس کر لینا بھی محبت ہے

kisi ko jee bhar ke mehsoos kar lena bhi mohabbat hai

اپنے دل سے نکالو تو مانوں،
یوں چھوڑ جانا تو کوئی کمال نہیں

apne dil se nikalu to manoo ,
yun chore jana to koi kamaal nahi

تم میری روح کی آواز ہو
خاص نہیں تم بہت خاص ہو

tum meri rooh ki aawaz ho
khaas nahi tum bohat khaas ho

آج تمہارے لبوں کی نیت کر کے،
ایک خوبصورت گلاب چوما ہم نے

aaj tumahray labon ki niyat kar ke ,
aik khobsorat ghulaab chooma hum ne

کوئی بتلاو اک عمر کا بچھڑا محبوب،
اِتفاقاً کہیں مل جائے تو کیا کہتے ہیں

aaj tumahray labon ki niyat kar ke ,
aik khobsorat ghulaab chooma hum ne

کیوں بار بار پوچھتے ہو پیار کی منزلیں
کہا نا۔۔۔ آخری سانس تک تیرے ہیں

kyun baar baar puchhte ho pyar ki manzilain
kaha na. .. aakhri saans tak tairay hain

بات بات پے مُسکراتے ہو کیوں بار بار
جان لینے کے طریقے تو اور بھی ہیں

baat baat pay Muskuratay ho kyun baar baar
jaan lainay ke tareeqay to aur bhi hain

دُور رہ کر بھی جو سمایا ہے میری روح میں
پاس والوں پر وہ شخص کتنا اثر رکھتا ہو گا

door reh kar bhi jo samaya hai meri rooh mein
paas walon par woh shakhs kitna assar rakhta ho ga

جس گھڑی تم سے بات ہوتی ہے
وہی گھڑی میری کائنات ہوتی ہے

jis ghari tum se baat hoti hai
wohi ghari meri kaayenaat hoti hai

پچھلے پہر کی رات ڈراتی رہی مجھے
اک اجنبی کی یاد ستاتی رہی مجھے

pichlle pehar ki raat daraati rahi mujhe
ik ajnabi ki yaad satati rahi mujhe

سوئی ہوئی تھی میں تو حسیں گل کی گود میں

تتلی تمہارے شعر سناتی رہی مجھے

soi hui thi mein to hsin Gul ki goad mein

titlee tumahray shair sonaati rahi mujhe

اب تک وہ تیرے پیار کی لذت نہیں گئی

ہر وقت سینے سے جو لگاتی رہی مجھے

ab tak woh tairay pyar ki lazzat nahi gayi

har waqt seenay se jo lagati rahi mujhe

دیکھا تو اس کی آنکھ میں تصویر تھی
مری جو زندگی کے خواب دکھاتی رہی مجھے

dekha to is ki aankh mein tasweer thi
meri jo zindagi ke khawab dukhati rahi mujhe

ہر دم میں تیرے عشق میں شعلہ بنی رہی
ہجرت میں تیری یاد جلاتی رہی مجھے

har dam mein tairay ishhq mein shola bani rahi
hijrat mein teri yaad jalatii rahi mujhe

کيا خبر اِک نَظر ہی پڑ جائے
ہم تمہارے ليئے ہی سنورتے ہيں

kya khabar ik Nazar hi par jaye
hum tumahray liye hi sanwartay hain

آگ ایسی لگی تھی سینے میں
آنکھ سے دل میں وہ اتر نہ سکا

aag aisi lagi thi seenay mein
aankh se dil mein woh utar nah saka

آیا کچھ اس ادا سے کہ پلکیں بھیگو گیا
جھونکا تیرے خیال کا کتنا شدید تھا

aaya kuch is ada se ke palken bheego gaya
jhaunka tairay khayaal ka kitna shadeed tha

وہ سامنے تھا مگر اُس کو نِگاہ چُھو نہ سکی
یہ احترام کی حد تھی یا حوصلہ کا کمال

woh samnay tha magar uss ko nigah chُho nah saki
yeh ehtram ki had thi ya hosla ka kamaal

تیری آنکھوں کی قسم زندگی سمجھا ہے تجھے
تجھ کو کچھ سوچ کہ سانسوں میں شراکت دی ہے

teri aankhon ki qisam zindagi samjha hai tujhe
tujh ko kuch soch ke saanson mein shiraakat di hai

وشمہ میں ساتھ ساتھ تھی فصلِ بہار کے
خوشبو کلی کلی پہ سجاتی رہی مجھے

Wishma mein sath sath thi fasal bahhar ke
khushbu kalie kalie pay sajate rahi mujhe

وہ رغبت کے قصّے اور یہ الفت کی باتیں مگر
پھر بھی محبّت کا بھروسہ کچھ نہیں

woh raghbat ke qsse aur yeh ulfat ki baatein magar
phir bhi mohabbat ka bharosa kuch nahi

جہاں سے ٹُوٹ جائے گا وہیں سے جوڑ لیں گے دِل

jahan se toot jaye ga wahein se jor len ge dil

قیدکر رکھا تھا دل کے نہاں خانوں میں
اب خوش ہو جا ؤ کہ آزاد کر دیا ہے تمہیں

قیدکر rakha tha dil ke nihaan khaanoon mein
ab khush ho ja o ke azad kar diya hai tumhe

کبھی تمہاری یاد کا کوئی تارا ٹمٹماتا تھا
وقت رفتار میں بھی دل نہ بھول پاتا تھا

kabhi tumhari yaad ka koi tara tmtmata tha
waqt raftaar mein bhi dil nah bhool paata tha

کچھ دیر سے ہی سہی مگر سمجھ گیا ہے سنو !
دیا تمہاری یاد کا بھی اب بجھ گیا ہے

kuch der se hi sahi magar samajh gaya hai suno !
diya tumhari yaad ka bhi ab bujh gaya hai

فضاؤں کی ایسی کفالت کروں میں
ہواؤں سے ہر دم شرارت کروں میں

fizaon ki aisi kifalat karoon mein
hawaon se har dam shararat karoon mein

ملی پر، بہت مشکلوں سے ملی ہے
محبت سے کیا اب شکایت کروں میں

fizaon ki aisi kifalat karoon mein
hawaon se har dam shararat karoon mein

جو رہتا ہے دل میں ، اسے مجھ کو دے دے خدا
تیری ہر دم عبادت کروں میں

jo rehta hai dil mein, usay mujh ko day day kkhuda
teri har dam ibadat karoon mein

اندھیروں نے ہر سو بھرے ہیں اندھیرے
ستاروں سے کیسے تجارت کروں میں

andheron ne har so bharay hain andheray
sitaron se kaisay tijarat karoon mein

وہ بیٹھا ہے راہوں میں سولی سجائے تو
رسموں سے کیسے بغاوت کروں میں

andheron ne har so bharay hain andheray
sitaron se kaisay tijarat karoon mein

مجھے چاہنے والے دل میں مکیں ہیں
محبت کی سب میں تلاوت کروں میں

mujhe chahanay walay dil mein maken hain
mohabbat ki sab mein tilawat karoon mein

یہ دل تیرے قدموں میں رکھ بیٹھی
وشمہ بتا اور کیسے محبت کروں میں

yeh dil tairay qadmon mein rakh baithi
Wishma bta aur kaisay mohabbat karoon mein

تم ا بتدا تو کرو محبت کی
ہم انتہا نہ کر دے عشق کی تو کہنا

tum a بتدا to karo mohabbat ki
hum intahaa nah kar day ishhq ki to kehna

مِیرا عِشقّ ہُوا نہ کَامِل، سُرخُرو تُو بھی نہ ہوگا
مَر تو میں جاؤں گا ایک دِن، جَاوِداں تُو بھی نہ ہوگا

mِira ishhq howa nah kaamil, surkhuru too bhi nah hoga
Mar to mein jaoon ga aik dِn, jaudan too bhi nah hoga

معصومیت کا کچھ ایسا انداز تھا میرے صنم کا
اُسے تصویر میں بھی دیکھوں تو پلکیں جُھکا لیتی ہے

masomiyat ka kuch aisa andaaz tha mere sanam ka
ussay tasweer mein bhi daikhon to palken Jhuka layte hai

دیکھو یہ کسی اور کی آنکھیں ہیں کہ میری
دیکھوں یہ کسی اور کا چہرہ ہے کہ تم ہو

dekho yeh kisi aur ki ankhen hain ke meri
daikhon yeh kisi aur ka chehra hai ke tum ho

آنکھوں کے قریب تو نہیں لیکن
میرے دل کے بہت قریب ہو تم

aankhon ke qareeb to nahi lekin
mere dil ke bohat qareeb ho tum

اُس کی آنکھوں میں نظر آتا ہے سارا جہاں مجھے
مگر اُس کی آنکھوں میں خود کو کبھی دیکھا ہی نہیں

uss ki aankhon mein nazar aata hai sara jahan mujhe
magar uss ki aankhon mein khud ko kabhi dekha hi nahi

تیری انگلیاں کھیلتی رہیں میرے بالوں سے
ہم دونوں رات کو شبنم کی اوس پر سوئے

teri ungelian khelti rahen mere balon se
hum dono raat ko shabnam ki oas par soye

اور جا کے کروں گا شکایت رَبِ کریم سے تیری بیوفائی کی
کہ گنہگار تو میں بھی ہوں مگر، جَنت میں تُو بھی نہ ہوگا

aur ja ke karoon ga shikayat Rab kareem se teri bewafaai ki
ke gunehgaar to mein bhi hon magar, jannat mein too bhi nah hoga

اس کے چہرے کی چمک کے سامنے سادہ
لگا آسماں پہ چاند پورا تھا مگر آدھا لگا

is ke chehray ki chamak ke samnay saada
laga aasmaa pay chaand poora tha magar aadha laga

چھوٹ جائے زمانہ کوئی غم نہیں
ہاتھ تیرا رہے بس میرے ہاتھ میں

chhuut jaye zamana koi gham nahi
haath tera rahay bas mere haath mein

محبت کیا ہے اہلِ علم جانیں ہمیں
عادت تمہاری ہو گئی ہے

mohabbat kya hai ehley ilm jaanen hamein
aadat tumhari ho gayi hai

یہ شِراکت بھی کیسے سہہ لوں
کہ چُھو رہی ہیں ہوائیں تم کو

yeh shiraakat bhi kaisay seh lon
ke chُho rahi hain hawae tum ko

کھو نہ جاؤں کہیں زمانے میں
اپنے ہاتھوں میں میرا ہاتھ رہنے دو

kho nah jaoon kahin zamane mein
–apne hathon mein mera haath rehne do

روٹھے ہو تو مجھ پر کوئی تہمت نہ لگانا
کس کس کو بتاؤں گا میں ایسا تو نہیں ہوں

ruthe ho to mujh par koi tohmat nah lagana
kis kis ko batau ga mein aisa to nahi hon

تم جو پوچھو اپنی اہمیت مجھ سے تو سُنو
اِک تم کو جو چُرا لوں تو زمانہ غریب ہو جائے

tum jo pucho apni ahmiyat mujh se to sunooooooo
ik tum ko jo chura lon to zamana ghareeb ho jaye

صاحب تمہیں معلوم نہیں اندازِ محبت دل
خود ہی جھک جاتا ہے جھکایا نہیں جاتا

sahib tumhe maloom nahi andaz mohabbat dil
khud hi jhuk jata hai jhukaya nahi jata

اور تو پرانی باتیں یاد نہیں مجھے
ہاں وہ تیری گردن پہ تِل ہوا کرتا تھ

aur to purani baatein yaad nahi mujhe
haan woh teri gardan pay tِl sun-hwa karta tha

جو جینے کی وجہ ہے وہ بھی تیرا عشق
جو جینے نہیں دیتا ہے وہ بھی تیرا عشق

jo jeeney ki wajah hai woh bhi tera ishhq
jo jeeney nahi deta hai woh bhi tera ishhq

تم جانتے ہو نا میری جان بستی ہے تم میں

tum jantay ho na meri jaan bastii hai tum mein

تیرا دیدار ، تیری فکر تجھ سے پیار کی
باتیں تقاضا یہی دل کا صبح شام ہوتا ہے

tera deedar, teri fikar tujh se pyar ki
baatein taqaza yahi dil ka subah shaam hota hai

کبھی کبھی کہ تصور سے جی نہیں بھرتا
میرے خیال میں آؤ تو بار بار آؤ

kabhi kabhi ke tasawwur se jee nahi bharta
mere khayaal mein aao to baar baar aao

جانتے ہو سُکھ کیا ہے تمہارا مجھے میری جان کہنا

jantay ho sُkh kya hai tumhara mujhe meri jaan kehna

میرے آنگن میں آج اندھیرا ہے بہت
میری دہلیز کو پھر اپنا نظارہ دے دوا

mere aangan mein aaj andhera hai bohat
meri dehleez ko phir apna nzarah day dawa

گھر کی کھیتی ھے پیار پھر سے اگا لینگے۔
دل میں تیرے بیل وفا پروان چڑھا لینگے۔
کسی روز تو کھلینگےاس میں گل بہار کے

ghar ki khaiti he pyar phir se uga laingay .
dil mein tairay bail wafa parwan charha laingay .
kisi roz to کھلینگے is mein Gul bahhar ke

پاس تیرا اپنے ہونا فقط یاس ھے۔
اس بات کا تم کو بھی احساس ھے۔
مگر میرے ہمدم اے میرے ہمنو

paas tera –apne hona faqat yaas he .
is baat ka tum ko bhi ehsas he .
magar mere humdam ae mere ہمنو

نہ ستم کوئی محبت کا نہ آرزو کوئی محبت میں

nah sitam koi mohabbat ka nah arzoo koi mohabbat mein

عشق ھے آپ سے پیار ھے آپ سے۔ دل کی دنیا میرے گلذار ھے آپ سے۔ آپ کا پیار ھے اسد زندگی میری۔ یعنی دنیا میری ھے سنسار آپ سے۔ آپکے یار سوا مانو ادھورا ہوں میں۔ آپ ہو فصل گل نو بہار ھے آپ سے۔ آپ کی ایک جھلک کشتہ اکسیر ھے۔ د لے اسد نامراد کو قرار ھے آپ سے۔

ishhq he aap se pyar he aap se. dil ki duniya mere گلذار he aap se. aap ka pyar he Asad zindagi meri. yani duniya meri he sansar aap se. apke yaar siwa manu adhoora hon mein. aap ho fasal Gul no bahhar he aap se. aap ki aik jhalak kushta akseer he. daal le Asad namuraad ko qarar he aap se .

تیرے نزدیک ھونے لگتی ہوں
خود بخود ٹھیک ہونے لگتی ہوں

tairay nazdeek hone lagti hon
khud bakhud theek honay lagti hon

اس کے ہونٹوں کا لمس آئے
ہائے ایسا لگتا ہے شہد ہو جیسے

is ke honton ka lams aaye
haae aisa lagta hai shehad ho jaisay

میں بارش ہو جاؤں گا تم بادل ہو جاؤں گی
اتنا تم کو چاہوں گا تم پاگل ہو جاؤں گی

mein barish ho jaoon ga tum baadal ho jaoon gi
itna tum ko chahoon ga tum pagal ho jaoon gi

کسی پُر کیف لمحے میں بہک جانے پے
گر میں نے کہاں ہو کہ محبت ہے تو معافی چاہتا ہوں میں

kisi pur Kaif lamhay mein behak jane pay
gir mein ne kahan ho ke mohabbat hai to maffi chahta hon mein

لاپروا سا ہوں مگر تیری بہت پرواہ کرتا ہوں

laparwa sa hon magar teri bohat parwah karta hon

کسی اور کی جگہ باقی نہیں ہے مجھ میں
میں تم سے شروع ہو کر تم پہ ہی ختم ہوتا ہوں

kisi aur ki jagah baqi nahi hai mujh mein
mein tum se shuru ho kar tum pay hi khatam hota hon

جو تیرے دل کو لُبھا لے وہ ادا مجھ میں نہیں
کیوں نہ تجھ کو کوئی تیری ادا پیش کرو

jo tairay dil ko lubha le woh ada mujh mein nahi
kyun nah tujh ko koi teri ada paish karo

کمبخت دل مانتا ہی نہیں اسے بھلانے کو
میں ہاتھ جوڑتی ہوں وہ پاؤں پڑ جاتا ہے

kambakht dil maanta hi nahi usay bhulane ko
mein haath judte hon woh paon par jata hai

نہیں کوئی انسان محبت سے خالی
ہر اِک رُوح پیاسی ہر اِک دل سوالی

nahi koi insaan mohabbat se khaali
har ik rooh pyaasi har ik dil sawali

لال رنگ میں ملبوس ہے وہ شخص
لال رنگ کی قسمت سنور گئی ہوگ

laal rang mein malbos hai woh shakhs
laal rang ki qismat sanwar gayi hogi

مجھے آتے ہیں محبت کے تمام وظیفے
میں چاہوں تو تمہیں پاگل کر دو

mujhe atay hain mohabbat ke tamam wazifay
mein chahoon to tumhe pagal kar do

کچھ چیزیں ایک ساتھ اچھی لگتی ہیں
جیسے کہ ____ آپ اور میں

kuch cheeze aik sath achi lagti hain
jaisay ke ____ aap aur mein

عادتیں بگڑتی جارہی ہیں میری
وہ کھڑوس ہر خواہش پوری کرتا ہے میری

adaten bigarti jarahi hain meri
woh kharuus har khwahish poori karta hai meri

جس طرح کا سوچو گے اسی طرح ملیں گے ہم
گناہ گار بھی کمال کے ہیں اور پارساؤں کے امام بھی

jis terhan ka socho ge isi terhan milein ge hum
gunah gaar bhi kamaal ke hain aur پارساؤں ke imam bhi

میں تصور ہی کیوں کروں تمہارے بغیر رہنے کا
جہاں بھی تم رہو مجھے بس تمہارے ساتھ رہنا ہے

mein tasawwur hi kyun karoon tumahray baghair rehne ka
jahan bhi tum raho mujhe bas tumahray sath rehna hai

مانا کہ تیری دید کے قابل نہیں ہوں میں
تو میرا شوق دیکھ مرا انتظار دیکھ

mana ke teri deed ke qabil nahi hon mein
to mera shoq dekh mra intzaar dekh

قدموں میں بھی تکان تھی گھر بھی قریب تھا
پر کیا کریں کہ اب کے سفر ہی عجیب تھا

qadmon mein bhi takan thi ghar bhi qareeb tha
par kya karen ke ab ke safar hi ajeeb tha

کانپ اٹھتی ہوں میں یہ سوچ کے تنہائی میں
میرے چہرے پہ ترا نام نہ پڑھ لے کوئی

kanp uthti hon mein yeh soch ke tanhai mein
mere chehray pay tra naam nah parh le koi

رات کے شاید ایک بجے ہیں سوتا ہوگا میرا چاند

raat ke shayad aik bujey hain sota hoga mera chaand

جیسے ہو عمر بھر کا اثاثہ غریب کا کچھ
اس طرح سے میں نے سنبھالے تمہارے خط

jaisay ho Umar bhar ka asasa ghareeb ka kuch
is terhan se mein ne sambhale tumahray khat

اب کر کے فراموش تو ناشاد کرو گے
پر ہم جو نہ ہوں گے تو بہت یاد کرو گے

ab kar ke faramosh to Nashad karo ge
par hum jo nah hon ge to bohat yaad karo ge

ان کے دیکھے سے جو آ جاتی ہے منہ پر رونق
وہ سمجھتے ہیں کہ بیمار کا حال اچھا ہے

un ke dekhe se jo aa jati hai mun par ronaqe
woh samajte hain ke bemaar ka haal acha hai

تاب لائے ہی بنے گی غالبؔ واقعہ سخت ہے اور جان عزیز

taab laaye hi banay gi غالبؔ waqea sakht hai aur jaan Aziz

لوگ کہتے ہیں تم تھوڑا بدل گئے ہو
بتاؤ ٹوٹے ہوئے پتے رنگ بھی نہ بدلیں کیا؟

log kehte hain tum thora badal gaye ho
batao tootay hue pattay rang bhi nah badleen kya ?

Leave A Reply

Please enter your comment!
Please enter your name here